572

نئے آبی ذخائر کی تعمیر کیلئے 5سالہ منصوبہ تیار

پشاور۔ملک بھر میں قلت آب کے مسئلہ پر قابو پانے اور نئے آبی ذخائر کی تعمیر کے لیے اقدامات کی غرض نے پانچ سالہ آبی منصوبہ تیار کرلیاگیاہے منصوبہ میں آبی شعبہ میں مشکلات اور ان کے حل کے کے لیے اہداف کیا گیاہے۔

منصوبہ وزارت آبی وسائل کی طرف سے تیار کیاگیاہے جو بارہویں نئے پنج سالہ منصوبہ کاہی ایک حصہ ہوگا نئے آبی منصوبہ میں قومی آبی پالیسی میں متعین کیے گئے اہداف کے حصولکے لیے اقدامات تجویز کیے گئے ہیں منصوبہ میں گڈگورننس کے مسئلہ کو سب سے بڑا چیلنج قراردیاگیاہے اسی طرح ملک میں چھوٹے ،درمیانے اور بڑے درجہ کے ڈیموں کی تعمیر بھی منصوبہ کاحصہ ہے ملک کے چاروں صوبوں بشمول خیبر پختونخوا موجودہ نظام آبپاشی کو نئی ٹیکنالوجی کے ذریعہ تبدیل کرنے کی منصوبہ بندی بھی کی گئی ہے سند ھ طاس معاہد ے پر اس کی اصل روح کے مطابق عملدرآمدیقینی بنانے کے لیے بھی اقدامات کیے جائیں گے تاکہ قلت آب کے ساتھ بھارت کی آبی جارحیت کے مسئلہ سے بھی نمٹا جاسکے۔

اسی طرح افغانستان کے ساتھ مشترکہ پانی کی کڑ ی نگرانی کی جائے گی ملک بھر میں پمپوں کے ذریعہ پانی نکالنے کے طریقہ کار کو ریگولیٹ کیا جائے گا اسی طرح نہروں کی پختگی اور سروس سٹیشنوں کے لیے قواعدبھی وضع کیے جائیں گے