163

پاکستان میں ہزاروں ڈیبٹ کارڈ کا ڈیٹا چوری 

کراچی۔شہریوں کا ڈیبٹ کارڈ اور بینک اکاؤنٹ محفوظ نہیں ہیں۔عالمی ویب سائٹ نے پاکستانی بینکوں کے 8 ہزار 704 ڈیبٹ کارڈ کا ڈیٹا چوری ہونے کا دعویٰ کیاہے۔

آن لائن سیکیورٹی ایجنسی نے9 پاکستانی بینکوں کے اے ٹی ایم کارڈز آن لائن فروخت کے لیے پیش ہونے کا دعوی کیاہے دوسری جانب بینکوں نے بھی صارفین کو خطرے سے آگاہ کرنا شروع کردیاہے۔ویب سائٹ رپورٹ کے مطابق دنیا بھر کے 10ہزار400کارڈز کا ڈیٹا آن لائن فروخت کے لیے پیش کیا گیا جس میں سے 8 ہزار 700 کارڈز پاکستانی بینکوں کے تھے۔

دوسری جانب اسٹیٹ بینک آف ہاکستان نے پاکستانی بینکوں پر مزید سائبرحملوں کاخدشہ ظاہر کیا ہے۔خصوصی گفتگو میں ترجمان اسٹیٹ بینک عابد قمبر نے بتایاکہ صارفین ہوشیاررہیں،سائبر حملوں کا خطرہ ابھی ٹلا نہیں ہے۔ انھوں نے بتایا کہ بینکوں کے ڈیٹاچوری کی رپورٹ سامنے آئی ہے،کچھ بینکوں نے انٹرنیشنل ڈیبٹ کارڈ کی سہولت روک دی ہے۔ترجمان نے بتایاکہ ڈیٹا چوری کی رپورٹ کی تصدیق کا کوئی طریقہ نہیں ہے۔ اسٹیٹ بینک نے بینکوں کو سائبر سیکورٹی بڑھانے کی ہدایت کردی ہے اور بینکوں کو آئی ٹی سسٹم بہترکرنے کا کہا ہے۔