299

پشاور میں خواجہ سراء پر قاتلانہ حملہ 

پشاور۔ تھانہ پہاڑی پورہ کے علاقے میں غلط فہمی میں خواجہ سراء کو دوست سمیت قتل کرنے والے ملزم نے جیل سے رہائی کے بعد گلبہار میں اصل چٹکی نامی خواجہ سراء پر قاتلانہ حملہ کردیا جس کے نتیجے میں وہ بال بال بچ گیا پولیس نے بروقت کاروائی کرتے ہوئے ملزم کو اسلحہ سمیت گرفتار کرلیا گرفتار ملزم نے 8 ماہ قبل غلط فہمی میں چٹکی کے اہم نام خواجہ سراء کو دوست سمیت قتل کیا تھا پولیس نے مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی ہے۔

پولیس کے مطابق خواجہ سراء شکیل احمد عرف چٹکی ولد جان محمد خان سکنہ مردان حال گلبہار پلازہ نے تھانہ گلبہار پولیس کو رپورٹ کرتے ہوئے بتایا کہ آصف ولد تسلیم سکنہ اتحاد کالونی اس کوپروگرامات میں جانے سے منع کرتا رہتا تھا جس نے گزشتہ شب پروگرام پر جانے سے زبردستی روکنا چاہا تاہم انکار پر آصف نے طیش میں آکر اس پر فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں وہ بال بال بچ گیاادھر واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او اور ایس ایس پی آپریشنز کی ہدایت پر ایس پی سٹی شہزادہ کوکب فاروق، ڈی ایس پی عتیق شاہ اور ایس ایچ او تھانہ گلبہار نور حیدرپر مشتمل خصوصی ٹیم نے فوری کاروائی کرکے ملزم کو اسلحہ سمیت گرفتار کرلیا۔

واضح رہے کہ ملزم آصف اس سے قبل 27مارچ کو پہاڑی پور ہ میں چٹکی کے ہم نام خواجہ سراء کو فائرنگ کرکے قتل کیاتھاجس کے بعد وہ جیل میں قید تھا تاہم حال ہی میں اسے عدالت نے ضمانت پر رہا کیا ہے ۔ پولیس نے خواجہ سراء پر قاتلانہ حملے میں گرفتار ملزم کو عدالت میں پیش کرنے کے بعد جسمانی ریمانڈ حاصل کرلیا جبکہ ابتدائی بیانات بھی قلمبند کرلئے گئے ہیں پولیس کے مطابق ملزم کو تفتیش مکمل ہونے کے بعد جیل منتقل کیاجائیگا جبکہ عینی شاہدین سے بھی بیانات قلمبند کئے جارہے ہیں اس کے علاوہ مختلف زاویوں پر تفتیش بھی جاری ہے ۔