125

خیبر پختونخوامیں سائبر کرائم کیخلاف تین نئے تھانے قائم

پشاور۔سوشل میڈیا پر منفی سرگرمیوں اور سائبر کرائم کی شکایات بڑھنے پر وزارت داخلہ نے پشاور سمیت صوبے میں تین نئے تھانے قائم کر دیئے ہیں پشاور ، ابیٹ آباد ، ڈیرہ اسماعیل خان میں سائبر کرائم ایکٹ کے تحت مقدمات کے اندراج کے لئے تین نئے تھانے قائم کر دیئے گئے ہیں ایف آئی اے کی جانب سے نئے تھانوں کے قیام کے حوالے سے حدود بھی جاری کر دیئے ہیں ایف آئی اے ذرائع کے مطابق سائبر کرائم سیل الیکٹرانک کرائم سے متعلق تمام جرائم کے خلاف کاروائی میں خود مختار ہو گی۔

ایف آئی اے کے دوسرے شعبہ الیکٹرانک کرائم میں مداخلت نہیں کر سکیں گے جبکہ پشاور ، ابیٹ آباد ،ڈیرہ اسماعیل خان میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر سمیت عملے کی تعیناتی بھی کر دی ہے ۔

ابیٹ آباد تھانے میں ہزارہ ڈویژن ، ڈیرہ اسماعیل خان کے سائبر کرائم تھانے میں بنوں ڈویژن ، کوہاٹ ڈویژن اور ڈیرہ اسماعیل خان ڈویژن جبکہ پشاور میں قائم ہونے والے تھانے کے حدود میں پشاورڈویژن ،نوشہرہ ڈویژن کو شامل کیاگیا ہے۔ پشاور ، نوشہرہ ، چارسدہ ، مردان ، صوابی وغیرہ کے اضلاع تک ان کے اختیارات ہو نگے ۔ نئے رپورٹنگ سنٹرز انسداد الیکٹرانک کرائم ایکٹ 2016کے شق 51کے تحت قائم کئے جا رہے ہیں ۔