210

گاڑیوں کے نمبرز تبدیل کرنیوالا گروہ گرفتار

پشاور۔کیپٹل سٹی پولیس پشاور نے گاڑیاں چوری کرکے جعلی کاغذات اور چیسز نمبر تبدیل کرکے اونے پونے دامو ں میں فروخت کرنیوالے 21ملزموں کو گرفتار کرلیا گرفتار ملزمو ں میں گروہ کا ماسٹر مائنڈ اور جعلی کاغذات و چیسزتبدیل کرنیوالے ماہرین بھی شامل ہیں 

گرفتارملزموں کے قبضے سے 25 چوری شدہ گاڑیاں بھی برآمد کرلی گئی ہیں اس ضمن میں گزشتہ روز ایس ایس پی آپریشنز جاوید اقبال ایس پی کینٹ وسیم ریاض اور اے ایس پی حیات آباد نجم الحسنین کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایاکہ پشاور پولیس نے سرقہ شدہ گاڑیوں کے خلاف خصوصی مہم کا آغاز کرتے ہوئے اینٹی کارلفٹنگ سیل انچارج ڈی ایس پی گل عارف خان کی سربراہی میں متعدد کامیاب کاروائیاں کرتے ہوئے 18 ملزموں کو گرفتار کیا جبکہ ملزمان کے قبضہ سے 18 سرقہ شدہ گاڑیاں بھی بر آمد کر لی گئیں جن کوملک کے دیگر شہروں بشمول پشاور سے چوری کرکے چیسز نمبر میں ردو بدل کرنے کے بعد جعلی کاغذات بنوا کر فروخت کیا جانا تھا

اسی طرح حیات آباد پولیس نے بھی ایس پی کینٹ وسیم ریاض کی سربراہی میں کار چوروں کے خلاف حساس ادارے کے مدد و تعاون سے کارروائیاں کرتے ہوئے 3 ملزمان نیاز محمد ولد تاج محمد، شعور ولد محمد عارف اورکار چوروں کا ماسٹر مائنڈ قاصد ولدنثارجو جعلی کاغذات بنوانے اور چیسز تبدیل کرنے کا ماہر تھا کو بھی گرفتار کر لیاگیا ہے تینوں ملزمان کا تعلق قبائلی ضلع خیبرلنڈی کوتل سے ہے جن کے قبضہ سے 7 سرقہ شدہ گاڑیاں برآمد کر لی گئیں ہیں

ملزم قاصد کار چوروں سے اونے پونے داموں چوری شدہ گاڑیاں خرید کر قبائلی ضلع خیبر میں گاڑیوں کے چیسز نمبرات اور جعلی کاغذات بنوانے کے بعد سادہ لوح عوام کو فروخت کرتا تھا ملزمان نے دوران انٹاروگیشن کارچوری میں ملوث ہونے کا اعتراف کر لیا ہے جن کے خلاف مقدمات درج کر لئے گئے ہیں واضح رہے کہ گرفتار ملزمان میں سے 16 کو پہلے ہی عدالت کے روبرو پیش کر دیا گیا ہے جبکہ 5 ملزمان جو پولیس تحویل میں ہیں کو تفتیش کے بعد میڈیا کے سامنے پیش کر دیا گیا

ایس ایس پی نے بتایاکہ مہم کے دوران اب تک متعدد ملزمان کو گرفتار کرکے ان کے قبضہ سے درجنوں موٹر سائیکل اور متعدد گاڑیوں کے ساتھ ساتھ سینکڑوں کی تعداد میں سرقہ شدہ موبائل فونز بھی برآمد کر لئے گئے ہیں جن کو کورئیر سروس کے ذریعے اصل مالکان کو بھیج دیا گیا ہے ۔