391

بولی وڈ 20 سال پہلے جیسا نہیں رہا، تبو

اداکارہ تبو نے اعتراف کیا ہے کہ بولی وڈ اب 20 سال پہلے جیسا نہیں رہا، گزشتہ چند سال میں فلم انڈسٹری میں حیران کن تبدیلی آئی اور خصوصی طور پر آخری 5 سال میں بہت کچھ بدلا ہے۔ یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ کسی اداکار نے بولی وڈ میں تبدیلی کی بات کی ہو، تاہم تبو نے اس تبدیلی کو بہتر اور مثبت قرار دیا ہے۔

اداکارہ کا ماننا ہے کہ اس وقت جس طرح کی فلمیں بولی وڈ میں بن رہی ہیں یا جس طرح کے کردار بنائے جا رہے ہیں، پہلے ایسے کردار نہیں بنائے جاتے تھے۔ 47 سالہ اداکارہ کے مطابق اگر 2 دہائیاں پیچھے مڑ کر دیکھا جائے تو بولی وڈ میں ایسی فلموں کی بھرمار نظر آئے گی، جس میں ہیرو یا ہیروئن کا کردار ہی اہم ہوتا تھا، تاہم اب ایسا نہیں ہے۔

اداکارہ نے اعتراف کیا کہ اب کسی بھی فلم کی کامیاب کا کریڈٹ ہیرو یا ہیروئن کو نہیں بلکہ مجموعی کاسٹ کو جاتا ہے اور اس کی وجہ فلموں کے پلاٹ، کہانیوں اور کرداروں میں تبدیلی ہے۔

خبر رساں ادارے ’ڈی این اے انڈیا‘ سے خصوصی بات کرتے ہوئے تبو کا کہنا تھا کہ 20 سال قبل نئے اداکار ایسے کردار کرنے کو تیار نہیں ہوتے جو مختصر ہوں۔ اداکار نے کہا کہ اس وقت نئی نسل کے اداکار ہر طرح کا مختصر یا منفی کردار خوشی سے ادا کرتے ہیں اور کوئی بھی ہیرو یا ہیروئن کے کردار کا مطالبہ نہیں کرتا۔

تبو کے مطابق گزشتہ 5 سال میں بولی وڈ فلموں کی کہانی، پلاٹ اور کرداروں میں بہت فرق آیا ہے، اب ماضی کی طرح گھسے پٹے یا ہیرو اور ہیروئن کے کرداروں پر مبنی فلمیں نہیں بنائی جاتیں۔

پوچھا جاتا ہے کہ وہ کب تک فلموں میں نظر آئیں گی؟ اداکارہ نے واضح کیا کہ 20 سال پہلے اور آج بھی وہ فلموں میں دکھائی دیتی ہیں اور آنے والے وقت میں بھی وہ پردے پر جلوے دکھاتی نظر آئیں گی۔ ساتھ ہی اداکارہ نے اعتراف کیا کہ ماضی کے مقابلے اب وہ منتخب اور خاص فلموں میں کام کرتی ہیں اور آئندہ بھی یہی سلسلہ جاری رہے گا۔

اداکارہ نے اںٹرویو کے دوران ہدایت کاری اور فلم پروڈکشن میں قسمت آزمانے کو مسترد کردیا اور بتایا کہ وہ صرف اداکاری ہی جانتی ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے سوشل میڈیا کے استعمال پر بھی بات کی اور بتایا کہ ان کی عمر 16 سال نہیں کہ وہ ہر وقت سوشل میڈیا پر چیزوں کو تلاش کرتی رہیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ اپنی عمر کے حساب سے صحیح ہیں، تاہم وہ دیگر سوشل میڈیا ویب سائیٹس کے بجائے صرف انسٹاگرام پر موجود ہیں، جہاں وہ زندگی کی حسین یادیں مداحوں کے ساتھ شیئر کرتی ہیں۔

اداکارہ نے اگرچہ سوشل میڈیا کو فالتو قرار نہیں دیا، تاہم ان کا کہنا تھا کہ ان کی عمر ہر وقت سوشل میڈیا کے سحر میں کھوجانے کی نہیں ہے۔ خیال رہے کہ تبو نے 1982 میں فلمی کیریئر کا آغاز کیا اور اب تک 100 سے زائد فلموں میں کام کر چکی ہیں۔

گزشتہ برس ریلیز ہونے والی ان کی فلم ’اندھا دھن، گول مال فورِ‘ کامیاب گئیں تھیں۔ ان دنوں وہ ’دے دے پیار دے اور بھارت‘ کی شوٹنگ میں مصروف ہیں۔

فلموں میں تبو کی جوڑی زیادہ تر اجے دیوگن کے ساتھ سراہی جاتی تھی اور ان دونوں کے درمیان محبت کی چہ مگوئیاں بھی تھیں۔ تبو خود یہ اعتراف بھی کر چکی ہیں کہ انہوں نے اجے دیوگن کی وجہ سے آج تک شادی نہیں کی۔ تبو کے مطابق اجے اور وہ دونوں ایک ساتھ پلے بڑھے ہیں اور بہترین دوست بھی رہے ہیں۔