426

کراچی میں ماں نے ڈھائی سالہ بیٹی کی جان لے لی

کراچی۔کراچی کے علاقے سلطانہ آباد کی رہائشی خاتون نے گھریلو حالات سے تنگ کر آپنی ہی گود اجاڑ ڈالی۔پولیس کے مطابق کراچی کے علاقے کلفٹن میں دو دریا کے مقام پر ماں نے اپنے ہاتھوں سے ڈھائی سالہ بیٹی انعم کو پانی میں ڈوبو کر اس کی زندگی کا خاتمہ کردیا۔ واقعہ ڈیفنس فیز 8 میں فرحان شہید پارک کے قریب گزشتہ روز پیش آیا۔

ڈھائی سالہ بچی کی لاش منگل کی صبح دو دریا کے قریب سے مل گئی ہے۔ساحل پولیس کے مطابق واقعہ ڈیفنس فیز 8 میں فرحان شہید پارک کے قریب گزشتہ شام پیش آیا تھا۔ایس ایس پی ساؤتھ پیرمحمدشاہ کے مطابق پولیس موبائل پیر کے روز معمول کے گشت پر تھی کہ انہیں دریا کے کنارے مختصر ہجوم اور ایک خاتون پانی میں کھڑی دکھائی دیں۔

قریب جانے پر ہجوم سے پتا چلا کہ خاتون نے اپنی بچی کو مار کر پانی میں ڈبو دیا ہے۔ لوگوں کی نشاندہی پر 28 خاتون کو حراست میں لیا گیا اور بچی کی تلاش شروع ہوئی۔پیر محمد شاہ کے مطابق ملزمہ کی ڈھائی سالہ بچی انعم کی لاش منگل کی صبح عمار اپارٹمنٹ کے قریب دو دریا کے سمندر سے مل گئی ہے، قتل کا مقدمہ درج کرکے ملزمہ کو گرفتار کر لیا گیا ہے ۔ایس ایس پی انویسٹی گیشن طارق دھاریجو کے مطابق خاتون نے بیان دیا ہے کہ اس کے شوہر نے ایک ماہ قبل اسے بلاوجہ گھر سے نکال دیا تھا۔

اس کے باپ نے بھی جگہ نہ دی، وہ دربدر ہوگئی تھی، جس کی وجہ سے اس نے بچی سے چھٹکارا پا یا اور اس کے بعد خود بھی مرنا چاہتی تھی۔پولیس کے مطابق ملزمہ شکیلہ راشد گولیمار کی سلطان آباد کالونی کی رہائشی ہے، ساحل پولیس کے مطابق ملزمہ کا شوہر راشد شاہ کراچی کے نجی اسپتال میں ملازم ہے۔