125

بھارت مسعود اظہر کیخلاف ٹھوس شواہد پیش کرے، چین

بیجنگ۔چین کو مولانا مسعود اظہر کو عالمی دہشتگرد قرار دینے کیلئے ٹھوس ثبوت کی ضرورت ہے،چین کو ابھی اس معاملہ پر فیصلہ لینے کیلئے مزید وقت درکار ہے، مسعود اظہر کو بلیک لسٹ کرنے کے معاملے پر بھارت اور چین مابین اختلاف پایا جاتا ہے، چین اس معاملہ پر کوئی دباؤ قبول نہیں کرے گا،بھارت چھوٹے سے معاملہ کو عالمی سطح پربغیر کسی ثبوت کے بڑھا چڑھا کر پیش کرتا ہے، پلوامہ حملے میں نقصان پر چین کو بھی دکھ اور ہمدردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق شنگھائی انسٹیٹیوٹ آف انٹر نیشنل اسٹڈیز کے اعلیٰ عہدیدار لیو زونگی کا کہنا ہے کہ چین کو مولانا مسعود اظہر کوق عالمی دہشتگرد قرار دینے کیلئے ٹھوس ثبوت کی ضرورت ہے۔ چین اپنے موقف پر قائم ہے ۔چین کو اس معاملہ پر ٹھوس ثبوت اور مزید وقت درکار ہے۔ مولانا مسعود اظہر کو بلیک لسٹ کرنے کے معاملے پر چین اور بھارت درمیان دیرینہ اختلافات ہیں۔ اگر اس معاملہ پر نئی دہلی کامیاب ہوتی ہے تو دہشتگردی بارے اسلام آباد تنہائی کا شکار ہو سکتا ہے۔چین کی ٹیکنیکل حکمت عملی ہے کہ بھارت بتائے کہ اسکی نظر میں دہشتگردی کیا ہے۔یہاں سلامتی کونسل کی 1267شق پر مسعود اظہر دہشتگردی کے حوالے سے پورے نہیں اترتے۔

جیس محمد پر پہلے ہی سلامتی کونسل نے پابندی عائد کر رکھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اس معاملہ پر چین پر دباؤ ڈالنا چاہتا ہے لیکن چین کسی دباؤ کو قبول نہیں کرے گا۔ بھارت چھوٹے سے معاملہ کو عالمی سطح پربغیر کسی ثبوت کے بڑھا چڑھا کر پیش کرتا ہے،بھارت چین کو کچھ فراہم کئے بغیر چاہتا ہے کہ اسکے ساتھ کھڑا ہوا جائے جو کہ نا ممکن ہے۔ پلوامہ حملے میں نقصان پر چین کو بھی دکھ اور ہمدردی ہے۔چھونگ یانگ انسٹیٹیوٹ آف فنانشل اسٹڈیز کے عہدیدار لانگ سنگ چھون نے کہا کہ چین کو حالیہ پلوامہ حملے پر اہلکاروں کے خاندان کے ساتھ دلی ہمدردی ہے لیکن اس کی وجہ سے مسعود اظہر معاملہ پر چین کے اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئے گی۔

بھارت اگر کوئی نیا ثبوت پیش نہیں کرتا تو چین اپنے موقف پر ڈٹا رہے گا۔ بھارت کو بنا ثبوت کے اس معاملے پر روکنا چینی سفارتکاری کی کامیابی ہے۔ چین کو اپنے موقف میں تبدیلی کیلئے بھارتی ٹھوس ثبوت کی ضرورت ہو گی۔ لیکن اگر بھارت کے پاس کوئی نیا ثبوت نہیں ہے تو چین کا انکار قائم رہے گا۔ بھارت نے پلوامہ حملے کے بعد پاکستان کے خلاف عوامی جذبات کو بھڑکایا ہے۔ ڈائریکٹر ساؤتھ ایشین اسٹڈیز زانگ جیا ڈونگ نے کہا کہ مسعود اظہر معاملہ پر چین اپنے اصولی موقف پر کاربند ہے بھارت کوئی بھی ٹھوس ثبوت پیش کرنے سے قاصر رہا ہے بھارت کو اس معاملہ کو پس پشت ڈالتے ہوئے چین کے ساتھ اپنے تعلقات کو دیکھنا ہوگا وگرنہ دوطرفہ مفادات پر گہرا اثر پڑے گا۔