350

9 سالہ پاکستانی بچے نے کیمسٹری کی تاریخ کا عالمی ریکارڈ قائم کردیا

پاکستان کے 9 سالہ بچے زیدان حامد نے کم ترین وقت میں پیریاڈک ٹیبل ترتیب دے کر کیمسٹری کی تاریخ کا عالمی ریکارڈ قائم کردیا۔

زیدان حامد نے پہلی کوشش میں 5 منٹ 46 سیکنڈ میں تمام ایلیمینٹس کو ترتیب دے کر گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں اپنا نام درج کروالیا۔

بعد ازاں زیدان حامد نے دوسری کوشش کی جس میں انہوں نے اپنا ریکارڈ توڑتے ہوئے پیریاڈک ٹیبل 5 منٹ 41 سیکنڈ میں ترتیب دے دیا۔

عالمی ریکارڈ بنانے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے زیدان حامد کے والد نے کہا کہ میرے بیٹے نے ورلڈ ریکارڈ قائم کرنے کے لیے سخت محنت کی، میں نے اپنے بیٹے کو مسلسل پڑھایا۔

انہوں نے کہا کہ زیدان بہت ذہین ہے، مجھے اپنے بیٹے پر فخر ہے،میرے بیٹے نے آج ہماری اور پاکستان کی عزت میں اضافہ کردیا۔

زیدان کے والد نے کہا کہ جب لبنان کے علی غدز نے پیریاڈک ٹیبل ترتیب دینے کا ریکارڈ توڑا تھا تب میں مایوس ہو چکا تھا لیکن میرے بیٹے نے کہا بابا میں یہ ریکارڈ توڑوں گا۔

ان کا کہنا تھا کہ میں اس کامیابی پر خدا کا شکر ادا کرتا ہوں اور پورے پاکستان کو اس کامیابی ہر مبارکباد پیش کرتا ہوں۔

بار بار کوشش کی اور آج کامیاب ہوگیا، زیدان حامد

ورلڈ ریکارڈ قائم کرنے کے بعد میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے زیدان حامد نے کہا کہ میں اپنے والدین اور اساتذہ کا شکریہ ادا کرتا ہوں ، یہ ریکارڈ توڑنا بہت مشکل تھا۔

انہوں نے کہا کہ پریاڈک ٹیبل کو یاد کرنا بہت مشکل ہے،یہ بچوں کا کھیل نہیں ہے، پریاڈک ٹیبل کو یاد کرنے کے بعد اس پر غوروفکر کرنا پڑتا ہے۔

زیدان نے کہا کہ مسلسل کوشش سے بڑی کامیابی ملتی ہے، بار بار کوشش کی اور آج کامیاب ہوگیا،میں نے کبھی ہمت نہیں ہاری۔

کیمسٹری کا یہ اچھوتا ریکارڈ 15 اگست 2018 میں ڈاکٹر ولاز نے بنایا تھا، ڈاکٹر ولاز کا تعلق فورنی ہالز آف کیمیکل انجینئرنگ سے ہے۔

ڈاکٹر ولاز نے 8 منٹس 36 سیکنڈ میں ایلیمینٹس ترتیب دےکر ریکارڈ قائم کیا تھا، ڈاکٹر ولاز کا عالمی ریکارڈ لبنان کے علی غدر نے 25 فروری 2019 میں توڑا تھا۔

علی غدر نے پیریاڈک ٹیبل کے 150 سال مکمل ہونے پر 6 منٹ 44 سیکنڈ میں ریکارڈ توڑا جبکہ زیدان حامد نے 5 منٹ 45 سیکنڈ میں پیریاڈک ٹیبل ترتیب دے کر تمام ریکارڈ توڑ دیے۔