652

خیبر پختونخوامیں نیا پاکستان ہاؤسنگ سکیم کیلئے 3سکیمیں منظور

پشاور۔وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے نیا پاکستان ہاؤسنگ سکیم کے تحت صوبے میں گھروں کی تین مختلف تعمیراتی سکیموں کی منظوری دی ہے اور سکیموں پر تیز تر عملدرآمد کی ہدایت کی ہے۔ نیا پاکستان ہاؤزنگ سکیم کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے پشاور میں 8500کنال وسیع قطعہ اراضی پر بیس ہزار گھروں کی تعمیر کے مجوزہ پلان سے اتفاق کیا ہے اور ہدایت کی ہے کہ آئندہ بیس دن کے اندر منصوبے کی ابتدائی فیزیبیلیٹی مکمل کی جائے اور پاکستان ہاؤزنگ اتھارٹی کیساتھ مفاہمتی یادداشت پر دستخط کئے جائیں تاکہ سکیم کا بروقت اجراء یقینی ہو سکے۔ 

انہوں نے سوات اور ہنگو ہاؤزنگ سکیموں کی حتمی پروپوزل بھی آئندہ دس دنوں کے اندر پیش کرنے کی ہدایت کی ہے جس کے تحت ہنگو میں نو ہزار جبکہ سوات میں تین ہزار گھر تعمیر کئے جائیں گے۔ انہوں نے واضح کیاکہ نیا پاکستان ہاؤزنگ منصوبہ وزیراعظم عمران خان کی غریب عوام سے ہمدردی اور ویژن کا عکاس ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ مذکورہ سکیموں پر عملدرآمد میں تیز رفتار پیش رفت یقینی بنائی جائے کیونکہ موجودہ حکومت غریب اور ضرورت مند عوام کو سہولیات دینا چاہتی ہے۔

 وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں منعقدہ اجلاس میں وزیراعظم کے معاون خصوصی افتخار درانی، صوبائی وزیر برائے مواصلات و تعمیر ات اکبر ایوب، صوبائی وزیر ڈاکٹر امجدعلی وزیراعلیٰ کے مشیر ضیاء اللہ بنگش، پاکستان ہاؤزنگ اتھارٹی اسلام آباد سے نسیم قریشی، وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری شہاب علی شاہ، سیکرٹری خزانہ شکیل قادر، سیکرٹری ہاؤزنگ اور دیگرمتعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس کو نیا پاکستان ہاؤزنگ سکیم کے تحت پشاور میں دستیاب اراضی پر مکانات کی تعمیر کے حوالے سے تجویز پیش کی گئی۔ 

اجلاس کو آگاہ کیا گیا کہ پشاور میں تقریباً ستر ارب روپے کی لاگت سے ہاؤزنگ سکیم کے تحت دیگر سہولیات کے علاوہ بیس ہزار مکانات تعمیر کئے جاسکتے ہیں، پاکستان ہاؤزنگ اتھارٹی کے تعاون 

سے اس سکیم پر عملدرآمد کیا جائیگا، سکیم کے لئے باضابطہ ممبر شپ مہم چلائی جائیگی اور پاکستان ہاؤزنگ اتھارٹی کیساتھ مفاہمتی یادداشت پر دستخط کر کے سکیم کا اجراء کیا جائیگا۔ وزیراعلیٰ نے مجوزہ پلا ن سے اصولی اتفاق کیا اور ہدایت کی کہ بیس دنوں کے اندر ابتدائی فزیبیلیٹی مکمل کی جائے اور وقت ضائع کئے بغیر تیز رفتاری سے آگے بڑھیں۔ 

انہوں نے یقین دلایا کہ مذکورہ سکیم کے لئے درکار پانچ سو ملین روپے سیڈ منی اور سائٹ تک رسائی کے لئے سڑک کی تعمیر اور باؤنڈری وال کیلئے وسائل کا انتظام صوبائی حکومت کرے گی۔محمود خان نے سوات ماڈل ٹاؤن اور ہنگو ہاؤزنگ سکیم کے لئے حتمی اور مکمل پروپوزل دس دنوں کے اندر پیش کرنے کی ہدایت کی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ سکیموں کے اجراء کے طریقہ کار سمیت تمام معاملات واضح ہونے چاہئیں۔