322

40 ہزار سال پرانے بھیڑیے کا سر دریافت

روس کے شمالی صوبے یکوٹیا سے 40 ہزار سال پرانے بھیڑیے کا سر دریافت ہوا ہے جس کے بال اور دانت اب بھی موجود ہیں۔

یہ سر اتنے سالوں سے برف کی تہہ میں دبا ہوا تھا، جس کے باعث یہ کافی حد تک اپنی اصل حالت میں موجود ہے۔

انڈیپینڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق جہاں آج کے دور میں پورے بھیڑیے کے جسم کی لمبائی 66 سے 80 سینٹی میٹر ہوتی ہے وہیں دریافت ہونے والے بھیڑیے کے صرف سر کی لمبائی 40 سینٹی میٹر ہے۔

اس سر کو بعدازاں سخا جمہوریہ کے اکیڈمی آف سائنس ڈیپارٹمنٹ لایا گیا، جہاں سائنسدانوں نے بتایا کہ یہ سر ایک بالغ بھیڑیے کا ہے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ پہلی مرتبہ برفانی دور کے بالغ بھیڑیے کی باقیات ٹشوز سمیت محفوظ حالت میں ملی ہیں۔

اسٹاک ہوم سے تعلق رکھنے والی ایک ٹیم اس بھیڑیے کے ڈی این اے پر کام کررہی ہے۔