298

مولانا فضل الرحمان نے نیب کیخلاف طبل جنگ بنا دیا

پشاور۔جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی امیر مولانا فضل الرحمان نے نیب کے خلاف طبل جنگ بجاتے ہوئے اعلان کیاہے کہ نہ تو ان کے نوٹسوں کی پرواہے نہ ہی اس متنازعہ ادارے میں پیش ہونگے پچیس جولائی کو پشاور میں عوام کا سمندر سڑکوں پر ہوگا پورے ملک میں جے یو آئی کے کارکنان مہنگائی کے خلاف عوامی احتجا ج میں صف اول میں ہونگے مہنگائی کے ہاتھوں ستائے ہوئے عوام کی چیخیں آسمان تک جانے لگی ہیں ڈاکومینٹیشن کے نام پر عالمی مالیاتی ادارے عا م آدمی کی جیبوں تک رسائی کی سازشوں میں مصروف ہے جس کو ناکام بنادیں گے وہ گذشتہ روز صوبائی سیکرٹریٹ میں پریس کانفرنس کررہے تھے اس موقع پر صوبائی جنرل سیکرٹر ی مولانا عطاء الحق درویش،ڈپٹی جنرل سیکرٹری آصف اقبال اور سیکرٹری اطلاعات جلیل جان بھی موجود تھے مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ عام آدمی کی زندگی تنگ کردی گئی ہے قوم پر مغرب کا معاشی فلسفہ مسلط کردیاگیاہے۔

عالمی مالیاتی اداروں کے ملازمین کو بلا کر پالیسی ساز بنادیاگیاہے جو غلامی کی بدترین شکل ہے ملک کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیاگیاہے انہوں نے کہاکہ جبر کی بنیاد پر مسلط کیے گئے انتخابی نتائج ہم نے نہ تو تسلیم کیے ہیں نہ ہی تسلیم کریں گے یہی وجہ ہے کہ پوری قوم پچیس جولائی کو انجنیئز ڈ نتائج کے خلاف یوم سیاہ منائے گی جے یو آئی اکیلے ہی بارہ ملین مارچ کرچکی ہے اب پچیس جولائی کو پشاور میں عوام کی ٹھاٹھیں مارتا سمندر سڑکوں پرہوگا انہوں نے کہاکہ امریکہ اوریورپ دھاندلی کی پیداوارحکومت کی پشت پناہی چھوڑ دیں امریکی صدر کیونکر ایسے شخص کااستقبال کریں گے جس کی حکومت غیر قانونی ہے ان کادورہ امریکہ معمہ بن چکاہے کیا وہ اس لیے تو سفیر کے گھر میں قیام نہیں کریں گے کہ وہ امریکی قوانین کے مطابق مفرور ہیں انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کی حکومت نظریاتی شناخت تبدیل کرنے کے لیے سازشوں میں مصروف ہے ہمارے صوبہ میں اسلامیا ت میں قرآن مجید کا تحریف شدہ ترجمہ شامل کیاگیاتو پنجاب میں نصاب سے عقیدہ ختم نبوت کو ہی نکال دیاگیاہے جس کے خلاف جلد عوام نکلنے والے ہیں۔

 انہوں نے کہاکہ احتساب عدالتوں کے فیصلوں کی حقیقت ویڈیوز کے ذریعہ بے نقاب ہوچکی ہے اس کے بعد یہ ادارہ مزید مشکو ک ہوچکاہے یہ احتسابی نہیں انتخابی ادارہ بن چکاہے جو مخالفین کے خلاف استعمال ہورہاہے بیس سال تک میرے اثاثوں کی چھان بین کی گئی مگر ان کے ہاتھ کچھ بھی نہیں آیا میں نے پہلے بھی کہاتھااوراب بھی کہتاہوں کہ بھاڑ میں جائیں ان کے نوٹسز ہم نہ تو پیش ہونگے نہ بلیک میل ہوں گے ویسے بھی احتساب عدالتوں کے تمام فیصلے مشکوک ہوچکے ہیں جس کے بعد نواز شریف کو فوری طورپررہا کردیناچاہئے یہ تمام اب سیاسی قیدی بن چکے ہیں انہوں نے کہاکہ ڈپٹی چیئر مین سینٹ کے خلاف اقلیتی حکومت نے تحریک عدم اعتماد جمع کرکے ثابت کردیاہے کہ حکومت اصطبل کھولنے جارہی ہے جہاں اب گھوڑوں کی خرید وفروخت شروع کی جائے گی انہوں نے کہاکہ قبائلی اضلاع میں فوج کی بوتھ میں موجودگی سے الیکشن پھر سے متنازعہ ہوجائیں گے اس لیے پچیس جولائی کی تاریخ دہرانے سے گریز کیاجائے موجودہ حکومت کو مانتے ہیں نہ ہی اس کے ہوتے ہوئے قبائلی اضلاع میں منصفانہ انتخابات ہوسکتے ہیں۔