514

فنڈعدم ادائیگی ٗ پبلک سروس کمیشن مالی بحران کا شکار

پشاور۔خیبرپختونخوا پبلک سروس کمیشن فنڈز کی عدم فراہمی کے باعث مالی بحران کا شکار ہوگیا ہے کمیشن نے صوبائی حکومت سے فوری طور پر منجمد شدہ بجٹ ریلیز کرنے کی درخواست کرتے ہوئے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ فنڈز نہ ملنے کے باعث اگست اور ستمبر میں مختلف آسامیوں کے لئے امیدواروں کے ٹسٹ متاثر ہو سکتے ہیں اس سلسلے میں سیکرٹری خیبر پختونخوا پبلک سروس کمیشن کی جانب سے سیکرٹری انتظامیہ کے نام ارسال کئے گئے ۔

مراسلے میں کہا گیا ہے کہ محکمہ خزانہ کی جانب سے چارماہ کے لئے مختص کردہ بجٹ کے تحت کمیشن کو ٹیلی فون ، پوسٹیج ، سٹیشنری ، پرنٹنگ ، انٹرٹینمنٹ ، ٹرانسپورٹ ، مشینری کی مرمت وغیرہ کی مد میں 25 فیصد بجٹ جاری کیا ہے جبکہ ٹیلی فون وغیرہ کی مد میں صرف 2 لاکھ روپے کے فنڈز جاری کئے گئے ہیں کمیشن کی جانب سے مختلف آسامیوں کے لئے دی جانے والی درخواستوں کے حوالے سے ایس ایم ایس ایل اور ویب ہوسٹنگ کے استعمال کے ماہانہ اخراجات ڈیڑھ لاکھ روپے لئے ہیں۔

اس لئے اس مد میں فنڈز کی عدم دستیابی کے باعث کمیشن کاکام بری طرح متاثر ہو رہاہے جس کی وجہ سے اگست اور ستمبر کے مہینے میں مختلف آسامیوں کے لئے درخواستیں دینے والے امیدوار بھی متاثر ہو سکتے ہیں اور کمیشن اس قابل نہیں ہوگا کہ وہ امیدواروں کے ٹسٹ کا انتظام کر سکے اس لئے کمیشن کے روکے ہوئے بجٹ کو فوری طور پر ریلیز کیا جائے اور مختص شدہ بجٹ میں اضافہ کیا جائے۔