491

پشاور میں اے این پی رہنمابھانجے سمیت قتل

پشاور۔پشاور کے علاقے تہکال میں مبینہ طور پر ٹارگٹ کلنگ کی واردات میں مسلح موٹر سائیکل سواروں نے چلتی فائرنگ کرکے خیبر پختونخوا اسمبلی کے حلقہ پی کے 74 پشاور سے عوامی نیشنل پارٹی کے سابق امیدوار محمد ابرار خلیل کو بھانجے سمیت قتل کردیا ملزمان واردات کے بعد موقع سے فرار ہوگئے پولیس نے جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرکے نعشیں پوسٹ مارٹم کیلئے مردہ خانہ منتقل کردیں اور مقدمہ درج کرکے مختلف ذاویوں سے تفتیش کا آغاز کردیا ہے سپرنٹنڈنٹ آف پولیس کینٹ سرکل (ایس پی) وسیم ریاض کے مطابق بدھ کے روز عوامی نیشنل پارٹی کا رہنماء محمد ابرار خلیل اپنے بھانجے رشید خلیل کے ہمراہ اگاڑی میں جنازہ کی ادائیگی کیلئے گیا تھا۔

جہاں سے واپسی پر سبحان آباد میں چلماری روڈ پرمسلح موٹرسائیکل سوار نامعلوم افراد نے ان کی گاڑی پر فائرنگ کردی جس کے نتیجہ میں محمد ابرار اور ان کا بھتیجا رشید موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے جبکہ ملزمان واردات کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ایس پی کینٹ کے مطابق پوسٹ مارٹم کے بعد نعشیں ورثاء کے حوالے کردی گئی ہیں اور مقدمہ درج کرکے تفتیش کا آغاز کردیا گیا ہے واضح رہے کہ محمد ابرار خلیل پی کے 74 پشاور سے عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار تھے اس کے علاوہ وہ ایک سماجی کارکن بھی تھے جو فلاحی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے تھے۔پولیس نے قتل کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار کرلی۔

جس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ مقتول ابرار خلیل کی ماضی میں قتل مقاتلے کی دشمنی تھی لیکن جرگوں کے راضی نامہ ہوچکا ہے ایس ایچ او تہکال کامران مروت کے مطابق مختلف زاویوں پر تفتیش جاری ہے کیونکہ مقتول کی ماضی میں قتل مقاتلے کی دشمنی رہ چکی ہے اس علاوہ مقتول کو گھر سے تقریباً300سے 400 میٹر کے فاصلے پر قتل کیاگیا ہے ایس ایچ او کے مطابق مزید تفتیش جاری ہے ۔دوسری جانب ابرار خلیل اور اس کے بھانجے کی قتل کی واردات میں کلاشنکوف استعمال کی گئی پولیس کے مطابق مسلح موٹر سائیکل سوار وں کو علاقے کے مکینوں نے واضح طور پر دیکھا ہے ایک حملہ آور نے سیاہ رنگ کا ہیلمٹ پہن رکھا تھا جبکہ دوسرا حملہ آور نقاب پوش تھا ۔