128

منظور وٹو کے گرد بھی نیب کا گھیرا تنگ، تحقیقات شروع

لاہور: نیب نے سابق وزیر اعلیٰ پنجاب اور وفاقی وزیر میاں منظور وٹو کے خلاف بھی انکوائری شروع کردی ہے۔

کرپشن کے مختلف کیسز میں ملوث بڑے بڑے سیاسی رہنما نیب کے ریڈار پر آگئے ہیں، نیب کی جانب سے سابق وفاقی وزیر میاں منظور وٹو کے خلاف بھی یوٹیلٹی اسٹورز میں غیرقانونی بھرتیوں کے الزامات پر انکوائری شروع کردی گئی ہے۔

نیب ذرائع کے مطابق میاں منظور وٹو نے 2008 سے 2013 کے دوران بطور وفاقی وزیر صنعت و پیداوار کے یوٹیلٹی اسٹورز میں 200 سے زائد ایریا مینیجرز کو غیر قانونی طور پر بھرتی کیا، منظور وٹو نے کچھ من پسند افراد کو نوازنے کے لیے 10 یوٹیلٹی اسٹورز پر ایک ایریا مینیجر لگایا جبکہ اس سے پہلے ایک ایریا مینیجر 15 یوٹیلٹی اسٹورز کے معاملات کی دیکھ بھال کرتا تھا۔

نیب کے مطابق میاں منظور وٹو کے خلاف متعلقہ محکموں سے ریکارڈ حاصل کیا جاچکا ہے جبکہ جلد میاں منظور وٹو کو بیان قلمبند کروانے کےلیے طلب کیا جائے گا۔