187

جاپان میں طوفانی بارش سے تباہی ٗ لاکھوں افراد بے گھر

ٹوکیو۔جاپان میں تاریخی طوفانی بارشوں اور لینڈ سلائیڈنگ کے باعث ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 100 جب کہ بے گھر افراد کی تعداد 20 لاکھ سے زائد ہوگئی ، حکومت نے 40 لاکھ افراد کو گھروں سے نقل مکانی کی وارننگ جاری کردی۔جاپانی حکام کے مطابق ملک کے مختلف حصوں میں ہونے والی جاپانی تاریخ کی سب سے خطرناک بارشوں کے سبب مختلف علاقوں میں سیلاب آگیا، کئے علاقے ڈوب گئے جبکہ لینڈ سلائیڈنگ کے واقعات بھی پیش آئے ہیں جس کے باعث ہلاکتیں ہوئیں، سیکڑوں گھر تباہ ہوچکے ہیں یا انہیں شدید نقصان پہنچا ہے۔مختلف شہروں میں تباہی سے نمٹنے کے لیے تمام سیکیورٹی فورسز سمیت حکومت نے فوج کو بھی طلب کیا ہوا ہے جو ڈوبے ہوئے علاقوں سے کشتیوں کی مدد سے لوگوں کو محفوظ جگہ منتقل کررہی ہے۔

جاپانی میڈیا کے مطابق اب تک ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 100 سے زائد ہوچکی ہے، متاثرہ علاقوں کے 20 لاکھ سے زائد افراد اپنے گھروں کو چھوڑ کر جاچکے ہیں، کئی افراد زخمی ہیں جن کی حالت تشویش ناک ہیاور 50 سے زائد افراد تاحال لاپتا ہیں جن کی تلاش جاری ہے۔جاپانی ادارے جاپانیز پبلک براڈ کاسٹر کے مطابق شہراواجیما میں رات پانچ بجے سے سات بجے محض دو گھنٹے کے درمیان 364 ملی میٹر یعنی ساڑھے 14 انچ بارش ریکارڈ کی گئی۔ اسی طرح ایک اور شہر سوکومو میں دو گھنٹے کے دوران 263 ملی میٹر ( ساڑھے 10 انچ) بارش ہوئی۔

حکومت کے مطابقمحکمہ مو سمیا ت نے بارشوں کے ایک نئے سلسلے کی پیش گوئی ہے جس کے باعث مغربی اور مشرقی علاقوں کے چالیس لاکھ افراد کو ان علاقوں سے نقل مکانی کی وارننگ جاری کردی گئی ہے۔ وارننگ میں کہا گیا ہے کہ ان علاقوں میں رہنے والوں کو طوفانی بارشوں، لینڈ سلائیڈنگ اور سیلابی ریلے کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے اس لیے وہ یہاں سے کہیں اور کوچ کرجائیں۔وزیر اعظم شنزو ابینے اس سانحے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ 54 ہزار سے زائد امدادی و سیکیورٹی اہلکار سرچ اینڈ ریسکیو آپریشن میں مصروف ہیں۔